گوئٹے مالا نے بھي اپنا سفارتخانہ بيت المقدس منتقل كرنے كا اعلان كرديا

تاریخ اشاعت:05/10/1396
امريكہ كے بعد لاطيني امريكي ملك گوئٹے مالا نے بھي اپنا سفارتخانہ تل ابيب سے مقبوضہ بيت المقدس منتقل كرنے كا اعلان كرديا ہے۔
ابنا ۔ كي رپورٹ كے مطابق امريكہ كے بعد لاطيني امريكي ملك گوئٹے مالا نے بھي اپنا سفارتخانہ تل ابيب سے مقبوضہ بيت المقدس منتقل كرنے كا اعلان كرديا ہے۔ اطلاعات كے مطابق گوئٹے مالا كے صدر جمي موريلس نے اسرائيل ميں موجود اپنے سفارتخانے كوبيت المقدس منتقل كرنے كاحكم ديا ہے۔ جمي موريلس نے فيس بك پوسٹ پر كہا كہ انہوں نے يہ فيصلہ اسرائيلي وزيراعظم نيتن ياہو سے بات كرنے كے بعد كيا ہے۔اپنے بيان ميں صدر موريلس نے كہا كہ گوئٹے مالا اسرائيل كا ديرينہ دوست ہے، انہوں نے متعلقہ حكام سے كہا ہے كہ وہ گوئٹے مالا كا سفارتخانہ تل ابيب سے بيت المقدس منتقل كرنے كے ليے ضروري اقدامات عمل ميں لائيں۔واضح رہے كہ گزشتہ ہفتے اقوام متحدہ كي جنرل اسمبلي نے قرارداد منظور كي تھي جس ميں امريكا سے كہا گيا تھا كہ وہ مقبوضہ بيت المقدس يا مشرقي يروشلم كو اسرائيل كا دارالحكومت تسليم كرنے كا اعلان واپس لے۔ اس قرارداد كے حق ميں 128 ممالك نے ووٹ ديا، 35 نے رائے شماري ميں حصہ نہيں ليا جب كہ 9 نے اس قرار داد كي مخالفت كي۔ قرارداد كي مخالفت كرنے والے ملكوں ميں گوئٹے مالا بھي تھا۔
دن كي تصوير
حرم امام رضا عليہ السلام   
ويڈيو بينك